Tuesday, January 04, 2011

تحریک طالبان پاکستان کی شرعی عدالت کے حکم پر ایک چور کا ہاتھ کاٹ دیا گیا

کلایا: تحریک طالبان پاکستان کی ایک نام نہاد شرعی عدالت کی جانب سے ایک شخص کو چوری کا مرتکب قرار دئے جانے کے بعد طالبان نے ایک چور کا ایک ہاتھ کاٹ ڈالا۔ یہ واقعہ اورکزئی میں پیش آیا۔عدالت کے فیصلہ کے بعد میر کے رہنے والے عبد الخالق نامی اس شخص کو اورکزئی کے ماموزئی میں قریشان چوک لے جایا گیا اور لوگوں کی بھیڑ کے سامنے اس کا ایک ہاتھ کاٹ ڈالا گیا تاکہ دیگر لوگوں کو بھی عبرت حاصل ہو۔ سیاسی ایدمنسٹریشن کے اس دعوے کے باوجود کہ اورکزئی کے 90فیصد علاقے کو انتہا پسندوں سے پاک کر دیا گیا ہے تحریک طالبان پاکستان اب بھی اورکزئی کے بیشتر علاقوں میں انتہائی سرگرم ہے۔اتوار کو انتہا پسندوں نے گلباز خان نام کے ایک شخص کو سیکورٹی فورسز کے لئے جاسوسی کرنے کے الزام میں اسماعیل زئی تحصیل کے اوتمیلہ میں ذبح کر دیا تھا۔اس کی لاش ایک تحریر کے ساتھ ماسامیلہ میں پیر کو ملی تھی۔اسی علاقہ میں گذشتہ سال نومبر میں تحریک طالبان نے 25مبینہ منشیات اسمگلروں کو سرعام کوڑے مارنے کی سزا دی گئی تھی۔
Read In English

http://urdutahzeeb.net/current-affairs/news/taliban-chop-thiefs-hand-in-orakzai

For information in Urdu visit our Blog : Composite Culture, Latest Urdu News , Urdu News

0 comments:

Post a Comment