Wednesday, January 12, 2011

ایران میں طالبات کے لئے اسلامی ڈریس کوڈ نافذ

تہران : ایران نے ملک کی کئی یونیورسٹیوں میں سخت اسلامی ڈریس کوڈ کا نفاذ کرتے ہوئے طالبات کے لمبے ناخن لگانے،بھڑکیلے لباس پہننے اور ٹیٹوز پر پابندی عائد کر دی ہے۔اس سلسلہ میں ایک نیم سرکاری نیوز ایجنسی فارس نے ان یونیورصٹیوں کی فہرست شائع کی ہے جہاں یہ پابندیاں لگائی گئی ہیں لیکن یہ نہیں بتایا گیا کہ کن وجوہات کی بناءپر ان یونیورسٹیوں کو چنا گیا ہے۔ان ضابطوں کے تحت طالبات بغیر اسکارف کے ہیٹ یا کیپ نہیں لگا سکتیں تنگ یا چھوٹی جینز نہیں پہن سکتیں اور سوائے بالیوں کے کوئی زیور نہیں پہن سکتیں۔ایران مغربی کلچر کے خلاف ملک گیر مہم چلا رہا ہے۔ 1979کے اسلامی انقلاب کے بعد نافذ شرعی قوانین کے تحت خواتین کھلے بالوں نہیں گھوم سکتیں اور لمبے اور ڈھیلے ڈھالے ساطر لباس پہن کر ہی گھر سے باہر نکل سکتیتھیں اب نئے ضابطے کے تحت طالبات پر بال رنگنے، بھنویں بنوانے یا بنانے چھوٹی آستینوں کی قمیص پہننے اور زیورات پہننے پر بھی پابندی لگادی گئی ہے۔
Read In English

0 comments:

Post a Comment