Friday, January 07, 2011

آسٹریلیا اننگز کی ہار کے دہانے پر

سڈنی: آسٹریلیا کو ایشز سریز میں 3-1سے شکست دینے کے لئے انگلینڈ کو اب صرف 3وکٹوں کی اور ضرورت ہے۔ سریز کے پانچویں اور آخری ٹیسٹ کے چوتھے روز کا کھیل ختم ہونے تک آسٹریلیا 7وکٹ پر صرف 213رنز ہی بنا سکی ہےاور ابھی اسے انگلینڈ کو دوبارہ بلے بازی پر مجبور کرنے کے لئے مزید 151رنز بنانے ہیں جو ایک بہت مشکل کام دکھائی دے رہا ہے کیونکہ اس کے نہ صرف تمام چوٹی کے بلے باز آﺅٹ ہو گئے بلکہ ہمیشہ ہی آڑے وقتوں میں کام آنے والے مشل جانسن بھی کوئی اس بار حوصلہ ہار گئے اور پہلی اننگز میں شاندار ہاف سنچری بنا کر آسٹریلیا کی اننگز کو مکمل تباہی سے بچانے کے بعد دوسری اننگز میں کوئی رن بنائے بغیر آﺅٹ ہو چکے ہیں اور اب بارش یا کوئی کرشمہ ہی آسٹریلیا کو اننگز کی ہار سے بچا سکتا ہے۔اانگز کی ہار سے بچنے کے لئے 364رنز کا تعاقب کرتے ہوئے آسٹریلیا کی اننگز ایک بار پھر لڑکھڑا گئی اور ابھی نصف منزل بھی طے نہیں ہو پائی تھی کہ اس کے سات کھلاڑی پویلین لوٹ گئے۔آسٹریلیا کی دوسری اننگز کی تباہی کا آغاز 13ویں اوور کی چوتھی گیند پر پیٹرسن پرائر کے اشتراک سے واٹسن ((38کے رن آﺅٹ ہو جانے سے ہوا۔ اس وقت ٹیم کا اسکور 46تھا ابھی اسکور میں 4رنز کا ہی اضافہ ہوپایا تھا کہ ساتھی اوپنر ہیوز بھی چلتے بنے انہیں بریسنین نے وکٹ کیپر پرائر کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ کرایا۔ ہیوز نے 58بالوں پر 13رنز بنائے۔ پہلا ٹیسٹ کھیل رہے پاکستان نژاد عثمان خواجہ نے کپتان مائیکل کلارک کے ساتھ مل کر اننگز سنبھالنے کی کوشش کی اور تیسرے وکٹ کے لئے 65رنز کی ساجھے داری کی ہی تھی کہ اینڈرسن نے پارائر کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ کراکے خواجہ کی بھی اننگز ختم کر دی خواجہ نے 73بالوں پر 21رنز بنائے اور دو چوکے لگائے۔ سات رنز بعد ہی کلارک بھی اینڈرسن پرائر کمبینیشن کا شکار ہو گئے انہوں نے 73بالوں پر 6چوکوں کے ساتھ 41رنز بنائے۔ ہسی اس اننگز میں بھی ناکام رہے اور صرف 12رنز ہی بنا سکے وکٹ کیپر ہیڈن نے 41گیندوں پر 3چوکوں کی مدد سے 30رنز بنائے اور ٹریملٹ کی گیند پر وکٹ کیپر پرائر کے چوتھے شکار بنے۔کھیل کا وقت ختم ہونے پر اسمتھ 24اور سڈل 17رنز بنا کر کھیل رہے تھے۔انگلینڈ کی جانب سےبریسنین، اینڈرسن اور ٹریملٹ نے دو دو وکٹلئے۔
Read In English

For information in Urdu visit our Blog : Composite Culture, Latest Urdu News , Urdu News

0 comments:

Post a Comment