Tuesday, January 25, 2011

عدالت کے باہر آروشی کا باپ قاتلانہ حملے میں شدید زخمی


غازی آباد : آروشی قتل کیس نے اس وقت ایک سنسنی خیز رخ اختیار کر لیا جب یہاں کی ایک عدالت کے باہر ایک نامعلوم شخص نے مقتولہ کے باپ راجیش تلوار کے سر پر چاپڑ سے کاری وار کر کے بری طرح زخمی کر دیا۔ جس سے وہ چکرا کر گر پڑے اور ان کے سر سے بے تحاشہ خون بہنے لگا۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ 54سالہ تلوار آروشی ہیمراج قتل کیس کی سی بی آئی کے ذریعہ از سر نو جانچ کرانے کے مطالبہ میں ایک درخواست داخل کرنے عدالت گئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ اپنی درخواست داخل کرنے کے بعد جب تلوار جب ایک فوٹو کاپی کرنے والے کی دوکان کے باہر کھڑا تھا کہ اچانک ہی ایک نوجوان نمودار ہوا اور اس نے تلوار کے سر پر کسی دھار دار شے سے وار کر دیا جس سے تلوار بری طرح زخمی ہو گیا۔راجیش کے وکیلوں نے اسے شدید زخمی حالت میں اسپتال پہنچایا۔ اس افرا تفری کے درمیان ایک راہگیر نے اس نوجوان کو قابو کر لیا اور پولس کے حوالے کر دیا ۔ پولس نے اسے فی الحال عدالتی حوالات میں بند کر دیا ہے۔واقعہ کے فوراً بعد عدالت کے احاطے میں موجود کچھ لوگوں نے اس نوجوان کو زدو کوب کیا ۔ وکیلوں نے بھی اس حملے کے خلاف نعرے بازی کی۔اس سے قبل تلوار نے آروشی قتل کیس میں سی بی آئی کی کیس بند کرنے سے متعلق رپورٹ کے خلاف 86صفحاتی عذر داری عدالت میں داخل کی اور از سر نو جانچ کرانے کا مطالبہ کیا۔
Read In English

For news in Urdu visit our page
: Latest News, Urdu News

0 comments:

Post a Comment