Tuesday, January 04, 2011

سعودی عرب میں ارب پتی شیوخ کی تعداد میں اضافہ

ریاض: سعودی عرب میں ارب پتی شیخوں کی تعداد میں بتدریج اضافہ ہوتا جارہا ہے۔اس وقت دنیا کے 50سب سے زیادہ دولتمند شیوخ میں 32سعودی عرب کے ہیں۔ تیل کی دولت سے مالا مال اس ملک میں ہر سال ارب پتی شیخوں کی تعداد بڑھتی ہی جارہی ہے۔عربین بزنس ڈاٹ کوم کے مطابق گذشتہ سال یعنی 2010میں سب سے دولتمند شیخوں میں سعودی عرب کے رئیسوں کی تعداد میں بہت تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔اس کی وجہ یہ ہے کہ سعودی حکومت نے پچھلے سال اپنے خزانے میں سے 200ارب ڈالر وہاں کاروبار کے لئے مختص کئے ہیں۔ وہاں برے پیمانے پر ہوٹل ،مال، ہائی وے وغیرہ بنائے جا رہے ہیں۔ اس کے زیادہ تر ٹھیکے وہاں کے شہریوں کو ہی ملے ہیں۔تیل کی بڑھتی قیمتوں کے سبب تاجروں کے پاس خوب پیسہ آرہا ہے وہاں کے 50دولت مندوں کے پاس 245ارب ڈالر کی املاک ہے۔ ایک سال میں ان کی کل دولت میں 18فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔دولتمند شیوخ کی اس فہرست میں شہزادہ الولی بن طلال سر فہرست ہیں ان کے پاس 20ارب ڈالر سے بھی زیادہ کی دولت ہے۔ سعودی عرب کے بعد دولتمند لوگوں کی فہرست میں متحدہ عرب امارات کا نام آتا ہے ان دونوں ملکوں کے چار چار بیوپاری اس فہرست میں ہیں۔

0 comments:

Post a Comment