Friday, January 21, 2011

منموہن وزارتی کونسل میں توسیع و ردو بدل، 3نئے چہرے شامل اور 3کو ترقی


نئی دہلی : وزیر اعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ نے بدھ کو اپنی کابینہ میں توسیع و ردو بدل کرتے ہوئے کچھ نئے چہروں کو اپنی ٹیم میںشامل کیا کچھ کو ترقی دی اور کچھ وزیروں کے محکمے بدلے۔ نئے وزیروں کی تقریب حلف برداری راشٹر پتی بھون میں عمل میں آئی۔تین وزراءمملکت کو ترقی دے کر کابینہ درجہ کا وزیر بنایا گیا جبکہ دو وزراءمملکت کو آزادانہ چارج دیا گیا۔ پرفل پٹیل، سری پرکاش جیسوال اور سلمان خورشید کو،جو ابھی تک وزیر مملکت تھے، ترقی دے کر کابینہ درجہ کا وزیر بنا دیا گیا۔مسٹر پٹیل کو شہری ہوا بازی کی وزارت سے ہٹا کر بھاری صنعتوں اور پبلک انٹرپرائزز کی وزارت دے دی گئی ہے۔ سمندر پار ہندوستانیوں کے امور سے متعلق وزیر ویالار روی کو شہری ہوا بازی کا اضافی چارج دے دیا گیا ہے۔نئے چہروں میںبینی پرساد ورما، کے سی وینو گوپال اور اشونی کمار ہیں ۔ بینی پرساد کو وزیر مملکت بنا کر اسٹیل کی وزارت کا آزادانہ چارج دیا گیا ہے ۔ مسٹر اشونی وزیر مملکت برائے منصوبہ بندی، پارلیمانی امور، اور سائنس و تکنالوجی اور ارضیاتی سائنس بنایا گیا ہے۔ جبکہ وینو گوپال وزیر مملکت برائے توانائی بنائے گئے ہیں۔مسٹر جیسوال کو وزارت کوئلہ کا کابینی درجے کا وزیر بنا دیا گیا یہ محکمہ پہلے بھی انہی کے پاس تھا۔مسٹر خورشید آبی وسائل کے نئے کابینی وزیر ہوں گے۔شرد پوار کی وزارت زراعت اور ڈبہ بند خوراک کی وزارت انہی کے پاس برقرار ہے البتہ ان سے صارفین کے امور اور خوراک و شہری رسد کے محکمے لے لئے گئے۔وزیر شہری ترقیات جے پال ریڈی کو پیٹرولیم اور قدرتی گیس کی وزارت دےدی گئی ہے جبکہ کپل سبل سے سائنس و تیکنالوجی کےمحکمےلے کر ان کے پاس ٹیلی کوم اور فروغ انسانی وسائل کے محکمے رہنے دئے گئے۔ایم ایس گل کو اسپورٹس اینڈ یوتھ افیرس سے ہٹا کر پروگرام عمل آوری کی وزارت دے دی گئی ہے ۔ اجے ماکن کو کھیل و امور نوجوانان کا وزیر مملکت بنا کر آزادانہ چارج دے دیا گیا۔کےوی تھامس کو ترقی دے کر آزادانہ چارج دے دیا گیا ہے ان کے پاس صارفین کے امور ، خوراک اور عوامی تقسیم کے محکمے برقرار رہیں گے۔دنیش پٹیل کو ریلوے کے وزیر مملکت سے ہٹا کر کان وزارت دے دی گئی ہے لیکن اس کے ساتھ ہی انہیں ترقی دے کر وزارت کا آزادانہ چارج دے دیا گیا۔سبودھ کانت سہائے کو فوڈ پراسسنگ انڈسٹریز سے ہٹا کر وزارت سیاحت دے دی گئی۔ پون کمار بنسل پارلیمانی امور کے وزیر برقرار رہیں گے لیکن ان سے آبی وسائل کی وزارت لے کر سلمان خورشید کو دے دی گئی۔کئی وزراءمملکت کے محکمے بھی بدلے گئے اور ای احمد کو ریلوے سے ہٹا کر پھر وزارت خارجہ میں بھیج دیا گیا جبکہ ہریش راوت کو وزارت محنت سے وزارت زراعت و ڈبہ بند خوراک انڈسٹریز میں وزیر مملکت بنا دیا گیا۔وی نرائن سوامی کو وزیر اعظم کے دفتر کے علاوہ محکمہ عملہ ، عوامی شکایات اور پنشن کاوزیر مملکت بنایا گیا ہے۔گورو داس کامت کو ٹیلی کوم سے وزارت داخلہ میں وزیر مملکت بنایا گیا ہے ۔ اے سائی پرتاپ کو باھری صنعتوں کو وزیر مملکت بنا دیا گیا۔جتن پرساد کو روڈ ٹرانسپورٹ اور وزارت شاہراہ میںوزیر مملکت بنایا گیا ہے۔ آر پی این سنگھ پیٹرولیم اینڈ نیچرل گیس کی وزارت میں وزیر مملکت ہو ں گے۔
Read In English

For news in Urdu visit our page : Latest News, Urdu News

0 comments:

Post a Comment